Home / حادثات / انڈونیشیا میں لاپتہ شخص اژدھے کے پیٹ سے برآمد

انڈونیشیا میں لاپتہ شخص اژدھے کے پیٹ سے برآمد

BBC Urdu_2انڈونشیا میں مقامی پولیس کا کہنا ہے کہ سلوایسی جزیرے میں ایک لاپتہ شخص کی لاش کو ایک اژدھا کے جسم سے نکال لیا گیا ہے۔

پولیس کے مطابق 25 سالہ اکبر اپنے پالم آئل فارم میں کام کرنے کی غرض سے گیا تھا لیکن جب وہ چوبیس گھنٹے تک واپس گھر لوٹ کر نہیں آیا تو پولیس کو مطلع کیا گیا۔

03124.01 Python 29Mar17پولیس کے ترجمان ماشورا نے بی بی سی انڈونیشیا کو بتایا کہ مقامی لوگوں کی اطلاع پر پولیس نے لاپتہ اکبر کو علاقے میں ڈھونڈا تو انھیں اکبر تو نہ ملا لیکن ایک 23 فٹ لمبا اژدھا اس پالم آئل فارم کے نزدیک ملا اور انھیں شک ہوا کہ اژدھا اکبر کو نگل چکا ہے۔ پولیس نے جب اژدھے کو کاٹا تو اس کے جسم سے اکبر کی لاش ملی۔

اژدھا دنیا کا سب سے بڑا رینگنے والا جانور تصور کیا جاتا ہے اور وہ اپنے شکار کو نگلنے سے پہلے اسے بھینچ کر ہلاک کرتا ہے۔

اژدھا شاذ و نادر ہی انسانوں کو اپنا شکار بناتا ہے لیکن ایسی اطلاعات ہیں کہ وہ کم عمر بچوں اور جانوروں کو نشانہ بنانے سے گریز نہیں کرتا۔

براوجایا یونیورسٹی سے تعلق رکھنے والے کورنیا وان نے بی بی سی انڈونیشیا کو بتایا کہ اس حجم کا اژدھا عام طور پر جنگلی سور اور کتوں جیسے جانوروں کو شکار کرتا ہے۔

بڑے اژدھا عام طور پر انسانی بستیوں کے قریب جانے سے گریز کرتے ہیں لیکن وہ پالم آئل کے کھیتوں کا رخ کرتے ہیں جہاں انھیں اپنے مرغوب شکار، سور اور کتے ملنے کا زیادہ امکان ہوتا ہے

About admin

Check Also

روسی مسافر جہاز بحیرہ اسود میں گر کر تباہ

روس کی وزارت دفاع نے بتایا ہے کہ لاپتا ہونے والے اس کے ایک فوجی …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Translate »
error: Content is protected !!