Home / سیاست / تبصرہ / ایران اور عراق میں تباہ کن زلزلے سے 330 سے زیادہ ہلاکتیں

ایران اور عراق میں تباہ کن زلزلے سے 330 سے زیادہ ہلاکتیں

عراق اور ایران کے سرحدی علاقے میں اتوار کی شب آنے والے زلزلے سے ہلاک ہونے والے افراد کی تعداد 335 ہوگئی ہے جبکہ ہزاروں افراد زخمی ہیں۔ ایرانی حکام کے مطابق سات اعشاریہ تین شدت کے زلزلے کے نتیجے میں بیشتر ہلاکتیں عراقی سرحد سے متصل ایران کے مغربی صوبے کرمانشاہ میں ہوئی ہیں۔

ایک ایرانی امدادی ادارے کا کہنا ہے کہ زلزلے سے متاثر ہونے والے 70 ہزار افراد کو فوری طور پر امداد اور پناہ گاہوں کی ضرورت ہے۔کرمانشاہ صوبے میں 300 سے زیادہ افراد ہلاک ہوئے ہیں جبکہ عراق میں اب تک زلزلے سے سات افراد کی ہلاکت کی تصدیق کی گئی ہے۔عراق کے دارالحکومت بغداد میں زلزلے کے بعد لوگوں سڑکوں پر نکل آئے۔تین بچوں کی والدہ ماجدہ امیر نے خبر رساں ادارے روئٹرز کو بتایا کہ میں اپنے بچوں کے ساتھ بیٹھ کر کھانا کھا رہی تھی کہ اچانک بلڈنگ ہوا میں جھولنے لگی۔ پہلے تو مجھے لگا کہ کوئی بم دھماکہ ہوا ہے۔ایرانی خبر رساں ادارے ارنا نے طبی حکام کے حوالے سے بتایا ہے کہ 3950 افراد زخمی ہوئے ہیں۔ایران کے سرکاری ہنگامی امدادی ادارے کے سربراہ پیر حسین قلیوند نے سرکاری ٹی وی پر بیان میں کہا ہے کہ ہلاک شدگان اور زخمیوں میں سے بیشتر کا تعلق سرحد سے 15 کلومیٹر کے فاصلے پر واقع قصبے سرپل ذہاب سے ہے۔

اس قصبے میں بیشتر عمارتیں زمین بوس ہو گئی ہیں، بجلی کی ترسیل کا نظام متاثر ہوا ہے اور رابطہ منقطع ہونے سے امدادی سرگرمیوں میں مشکلات کا سامنا ہے۔قصبے میں سرکاری ہسپتال کی عمارت کو بھی شدید نقصان پہنچا ہے۔زلزلے سے لوگ خوف میں مبتلا ہو گئے اور آفٹر شاکس کے خدشات پر شہریوں کی بڑی تعداد گھروں سے باہر سڑکوں پر پناہ لیے ہوئے ہے۔زلزلے کے جھٹکے اسرائیل اور ترکی میں بھی محسوس کیے گئے۔ایران کی سرکاری نیوز ایجنسی ارنا کا کہنا ہے کہ امدادی کارکنوں کو زلزلے سے متاثرہ ملک کے مغربی علاقوں میں روانہ کر دیا گیا ہے۔ایران میں امدادی ادارے ریڈ کریسنٹ کے سربراہ مرتضیٰ سلیم کا کہنا ہے کہ زلزلے کے نتیجے میں آٹھ دیہات کو نقصان پہنچنے کی اطلاعات ملی ہیں جبکہ متعدد دیہات میں بجلی اور مواصلات کا نظام متاثر ہوا ہے۔

About admin

Check Also

لڑکی بے حرمتی کا معاملہ، ریحام خان ڈیرا اسماعیل خان پہنچ گئیں

عمران خان کی سابق اہلیہ ریحام خان سرعام بے لباس کی جانے والی لڑکی کو …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Translate »
error: Content is protected !!