جرمنی: دولتِ اسلامیہ سے تعلق کے شبہ میں پناہ گزین گرفتار

0
8

bbc-urdu_2جرمن حکام کا کہنا ہے کہ ملک میں دہشت گردی کی نیت سے داخل ہونے والے تین شامی پناہ گزینوں کو گرفتار کیا گیا ہے۔

حکام کے مطابق گرفتار کیے جانے والے 17 ، 18 اور 26 سالہ شامی شہریوں کو شدت پسند تنظیم دولتِ اسلامیہ نے جرمنی بھیجا تھا۔9065-01-germandaesh-11sep16

پولیس کے بقول گرفتار افراد سے بڑی تعداد میں ’مواد‘ برآمد ہوا ہے لیکن کسی خاص منصوبے کے بارے میں ٹھوس شواہد نہیں ملے ہیں۔

جرمن محکمہ قانون کی جانب سے جاری کیے گئے بیان میں کہا گیا ہے کہ ’ گرفتار کیے جانے والے تینوں افراد گزشتہ برس نومبر میں دولتِ اسلامیہ کی جانب سے دیے جانے والے دہشت گردی کے منصوبے کے ساتھ ملک میں داخل ہوئے تھے، یا پھر انھیں کہا گیا تھا کہ ملک میں داخل ہو کر مزید احکامات کا انتظار کیا جائے۔‘اطلاعات کے مطابق یہ افراد جعلی دستاویزات پر سفر کر کے جرمن پہنچے تھے۔

منگل کو ان افراد کی گرفتاری کے لیے کی جانے والی کارروائی میں 200 سکیورٹی اہلکاروں نے حصہ لیا تھا اور کارروائی کے دوران پناہ گزینوں کے لیے بنائے جانے والے تین مخصوص رہائشی مقامات پر چھاپے مارے گئے تھے۔

خیال رہے کہ حالیہ عرصے میں جرمنی میں متعدد دہشت گردی کی کارروائیاں ہوئی ہیں۔رواں برس جولائی میں ہونے والے مختلف حملوں میں دس افراد ہلاک ہو گئے تھے۔

برلن میں بی بی سی کی نامہ نگار جینی ہل کے مطابق حالیہ عرصے میں ہونے والے دہشت گردی کے واقعات کے بعد سے ملک میں سکیورٹی ادارے ہائی الرٹ پر ہیں۔یاد رہے کہ جرمنی میں ماضی میں ہونے والے کچھ حملوں میں بھی پناہ گزین شامل رہے ہیں۔