Home / دھشت گردی / حلب: انخلاء کیلئے آنے والی بسوں پر مسلح افراد کا حملہ

حلب: انخلاء کیلئے آنے والی بسوں پر مسلح افراد کا حملہ

dawn-newsشام کے شہر حلب میں محصورین کے انخلاء کے لیے آنے والی بسوں کو مسلح افراد نے نذر آتش کردیا۔ تاہم سینئر ملٹری ذرائع کا کہنا ہے کہ واقعے سے حلب سے لوگوں کے متوازی انخلاء میں رکاوٹ نہیں ڈلنی چاہیئے۔

12102-01-syria-19dec16واضح رہے کہ حلب میں جاری شدید لڑائی کے باعث یہاں سے ہزاروں لوگ نقل مکانی کر رہے ہیں تاہم اس مقصد کے لیے آنے والی کم از کم 20 بسوں پر 2 درجن سے زائد مسلح افراد نے حملہ کرکے انھیں جلا دیا۔

خبر رساں ادارے اے ایف پی کے مطابق مسلح افراد نے ڈرائیوروں کو بسوں سے نیچے آنے کو کہا اور گاڑیوں پر فائرنگ کرنے کے بعد انھیں آگ لگا دی۔ یہ حملہ ایک ایسے وقت میں کیا گیا ہے جب 5 مزید بسیں بھی یہاں لائی گئی تھیں۔

مزید پڑھیں:حلب میں تباہی: بچوں کے آنسو بھی خشک ہوگئے

12097-01-evacuationsyria_02-18dec16ابھی تک حملہ آوروں کی شناخت نہیں کی جاسکی، تاہم شام میں انسانی حقوق کے لیے کام کرنے والے ایک آبزوریٹری گروپ کے مطابق یہ باغیوں کا کام ہوسکتا ہے جو لوگوں کے انخلاء کی وجہ سے پریشان ہیں۔

مانیٹرنگ گروپ کے مطابق القاعدہ سے معاہدے سے قبل النصرہ فرنٹ کے نام سے جانی جانے والی فتح الشام فرنٹ لوگوں کے انخلاء کے معاملے پر احرار الشام سے اختلاف رکھتی ہے۔

تاہم ملٹری ذرائع کا کہنا ہے کہ اس حملے سے انخلاء کا عمل متاثر نہیں ہونا چاہیے، ‘معاہدے کی پاسداری کے حوالے سے ایک اجتماعی خواہش موجود ہے اور تمام مشکلات کا حل نکالا جانا چاہیئے’۔

اتوار 18 دسمبر کو درجنوں بسیں مشرقی حلب میں داخل ہوئیں تاکہ وہاں محصور سیکڑوں افراد کو نکالا جاسکے۔

یہ بھی پڑھیں:شام کا حلب— کیا سے کیا ہوگیا

حلب میں شہریوں کی نقل مکانی کا سلسلہ جمعہ 16 دسمبر کو سیزفائر ٹوٹنے کے نتیجے میں رک گیا تھا۔اقوام متحدہ کے مطابق ‘حلب اب جہنم کا منظر پیش کررہا ہے جہاں پر شہریوں کی نقل مکانی کو یقینی بنایا جانا چاہیئے۔

جمعرات کو شام کے لیے اقوام متحدہ کے سفیر اسٹین ڈی مستورا نے بتایا تھا کہ مشرقی حلب میں اس وقت پھنسے افراد کی تعداد 50 ہزار کے قریب ہے۔

About admin

Check Also

کل بھوشن کی بیوی 2ماہ سے لا پتہ

پاکستان میں سزائے موت کے منتظر بھارتی خفیہ ادارے ’’را‘‘کے ایجنٹ کلبھوشن کی بیوی جسے …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Translate »
error: Content is protected !!