رقہ موصل شاہراہ پر عراقی افواج کا کنٹرول مکمل

0
15

saharعراقی افواج نے موصل سے رقہ جانے والے اسٹریٹیجک راستے کو مکمل طور پر اپنے کنٹرول میں لے لیا ہے۔

العالم کی رپورٹ کے مطابق، عراق کی عوامی رضاکار فورس حشد الشعبی کے کمانڈر ہادی العامری نے پیر کے روز اعلان کیا ہے کہ موصل سے رقہ جانے والے واحد راستے پر مکمل طور پر کنٹرول حاصل کرلیا گیا ہے۔ انہوں نے بتایا کہ حشد الشعبی کے جوانوں نے عدایہ قصبے پر قبضہ کرکے تل عبطہ اور تل الزلط کے راستے پر کنٹرول کر لیا ہے اور اس طرح دہشت گردوں کا رابطہ شام سے منقطع کردیا گیا ہے۔11035-01-riqqamosul-07nov16

ہادی العامری نے بتایا کہ حزب اللہ عراق کے دستوں نے اس اسٹریٹیجک قصبے کے علاوہ، ایک پہاڑی پر بھی کنٹرول حاصل کرلیا ہے جس کی اہمیت اس قصبے سے کم نہیں ہے۔ انہوں نے کہا کہ بدر تنظیم کے جوانوں نے بھی سحاجی علاقے کو بھی دہشت گردوں سے آزاد کرالیا ہے جس کے نتیجے میں ایک تلعفر، موصل اور رقہ کو جوڑنے والا راستہ عراقی افواج کے کنٹرول میں آگیا ہے۔

واضح رہے کہ موصل کے مغربی محاذ میں عراق کی رضاکار فورس کا آپریشن، وزیر اعظم حیدر العبادی کے براہ راست حکم سے انجام دیا جا رہا ہے۔ دوسری جانب عراقی افواج نے موصل میں موجود داعش دہشت گردوں کی ان گاڑیوں کی تصاویر شایع کی ہیں جن کا تعلق سعودی عرب اور اردن سے ہے۔ عراقی فوج کے ٹوئیٹر پرجاری ہونے والی ان تصاویر میں واضح طور پران گاڑیوں کی نمبر پلیٹ دیکھی جا سکتی ہے۔ اس موقع پر حشد الشعبی کے ڈپٹی کمانڈر ابومہدی المہندس نے سعودی عرب کو دہشت گردوں کا سرپرست اور حامی قرار دیا۔ انہوں نے کہا کہ داعش اور القاعدہ جیسے دہشت گرد گروہوں کو سعودی سازشوں کے تحت ہی وجود میں لایا گیا ہے، اسی لئے سعودی ذرائع ابلاغ ان کی مکمل حمایت کر رہے ہیں۔

ابو مہدی المہندس نے کہا کہ موصل شہر میں موجود دہشت گردوں کو مکمل طور پر ختم کرنے میں وقت لگ سکتا ہے کیونکہ ان عناصر کو امریکہ سمیت متعدد غیرملکی ذرائع انہیں معلومات فراہم کر رہے ہیں۔