Home / سیاست / تبصرہ / فوجی بغاوت کی آڑ میں ترکی پر آمرانہ حکومت مسلط

فوجی بغاوت کی آڑ میں ترکی پر آمرانہ حکومت مسلط

Shafaqna IRترک ڈیموکریٹک پارٹی کے ڈپٹی چیئرمین ’’الٹی نورس ‘‘ نے آر ٹی کے ساتھ انٹرویو میں کہا کہ ترک صدر رجب طیب اردوغان ناکام فوجی بغاوت کا استعمال کر کے ملک پر آمرانہ حکومت مسلط کرنے کی کوشش کررہا ہے۔114.01 Turkey 30Jul6

انہوں نے ترکی میں ہوئی حالیہ فوجی بغاوت پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ جب تک ملک  کی حکومت خاص کر صدر رجب طیب اردوغان ملک میں جمہوریت کی بحالی کو یقینی نہیں بنائیں گے تب تک فوجی بغاوتوں کا سلسلہ جاری رہے گا کیونکہ فوجی بغاوت جمہوری حکومت میں نہیں بلکہ آمرانہ حکومتوں میں انجام پاتی ہے۔

انہوں نے اردوغان حکومت کی طرف سے ہنگامی حالات کے نفاذ اور متعدد ٹی وی چینلوں اور اخبارات کو بند کر نے اور ان کے ایڈیٹروں کو گرفتار کرنے کے  منصوبوں کو فوجی بغاوت کے خلاف لڑنے کے طریقے کو  غیر مؤثر قرار دیا۔

موصوف ڈپٹی چیئرمین نے کہا کہ اگر ترک صدر نے کردوں کے خلاف جنگ اور ہمسایہ ملک شام کے اندرونی معاملات میں بے جا دخل اندازی  نہ کی ہوتی تو انقرہ کو فوجی بغاوت کا سامنا نہ کرنا پڑتا۔

انہوں نے کہا کہ ترکی میں تب تک امن قائم نہیں ہوسکتا ہے جب تک حکومت انقرہ ہمسایہ ملک شام میں اپنی بے جا مداخلت بند نہیں کرتی  ہے کیونکہ انقرہ حکومت کی معاندانہ پالیسیوں کی وجہ سے یہ ملک اب اپنے تمام ہمسایہ ممالک سے الگ تھلگ پڑ رہا ہے۔

الٹی نورس نے مزید کہا کہ رجب طیب اردوغان کی پالیسیوں ، ہنگامی حالات کے انعقاد اور حراست میں لئے گئے فوجیوں ، اخباری نمائندوں و دیگر اہم کارکنوں کے خلاف تشدد کی کاروائیوں سے حکومت انقرہ کے خلاف ترک عوام کا رجحان تبدیل ہوسکتا ہے جو اردوغان کیلئے کافی مہنگا ثابت ہوگا۔

About admin

Check Also

کل بھوشن کی بیوی 2ماہ سے لا پتہ

پاکستان میں سزائے موت کے منتظر بھارتی خفیہ ادارے ’’را‘‘کے ایجنٹ کلبھوشن کی بیوی جسے …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Translate »
error: Content is protected !!