مصر کے جنوبی علاقے سقارہ کے قریب مقبروں سے 6 ہزار برس پرانی درجنوں بلیوں اور بھنوروں کی حنوط شدہ لاشیں دریافت ہوئی ہیں۔

0
48

برطانوی نشریاتی ادارے دی گارجین کی رپورٹ کے مطابق قاہرہ کے جنوب میں واقع مقام سے دریافت کی گئی یہ حنوط شدہ بلیاں تقریباً 6 ہزار سال قدیم ہیں۔

وزیر برائے آثار قدیمہ خالد العنانی کا کہنا تھا کہ محکمے کی جانب سے جاری ایک مشن کے دوران مقبرے دریافت ہوئے جس کا آغاز اپریل میں کیا گیا تھا۔

انہوں نے بتایا کہ دریافت ہونے والے مقبروں میں سے 3 کو بلیوں اور ایک مقبرہ مجسمے کے لیے استعمال کیا گیا تھا۔

سقارہ کے ڈائریکٹر محمد یوسف کا کہنا تھا کہ یہ مقبرے فرعونوں کے پانچویں حکمران خاندان کے دور میں بنائے گئے تھے۔

انہوں نے کہا کہ اس کا داخلی دروازہ ابھی تک اصل حالت میں موجود ہے جس سے ظاہر ہوتا ہے کہ یہ پہلی مرتبہ دریافت ہوئے ہیں۔

مزید پڑھیں : اہرامِ مصر سے متعلق پیچیدہ ترین سوال کا جواب مل گیا

محمد یوسف کا کہنا تھا کہ آثار قدیمہ کے ماہرین آئندہ ہفتوں میں ان پر مزید تحقیق کریں گے۔

سپریم کونسل آف اینٹیکس کے سربراہ مصطفیٰ وزیری کا کہنا تھا کہ اس مشن کے دوران بھنوروں کی ممی بھی دریافت ہوئی۔