Ho Na Yeh Phool To Bulbul Ka Tarannum Bhi Na Ho

0
115

ہو نہ یہ پھول تو بلبل کا ترنم بھی نہ ہو
چمن دہر میں کلیوں کا تبسم بھی نہ ہو
یہ نہ ساقی ہو تو پھر مے بھی نہ ہو، خم بھی نہ ہو
بزم توحید بھی دنیا میں نہ ہو، تم بھی نہ ہو
خیمہ افلاک کا استادہ اسی نام سے ہے
نبض ہستی تپش آمادہ اسی نام سے ہے

Ho Na Ye Phool To Bulbul Ka Tarannum Bhi Na Ho
Chaman-e-Dehr Mein Kaliyon Ka Tabassum Bhi Na Ho
Ye Na Saqi Ho To Phir Mai Bhi Na Ho, Khum Bhi Na Ho
Bazm-e-Touheed Bhi Dunya Mein Na Ho, Tum Bhi Na Ho

*تحریک لبیک پاکستان**اقبال پڑھنے کیلیے اقبال جیسی غیرت بھی چاہیئے* *لبیک لبیک لبیک یا رسول اللہ صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم**جب تک دنیا میں ایک مسلمان بھی زندہ ہے حضورپاکﷺ کی عزت پر پہرہ ہوتا رہے گا* *عزت اسی کی ہو گئی جوحضور پاکﷺکی عزت کی بات کرے گا**اور اس پوسٹ کو زیادہ سے زیادہ شیئر کریں**ان شاءاللہﷻ۔۔۔رضوی مجاہد میڈیا کے پلیٹ فارم سے مزید اپڈیٹس بھی آپ تک پہنچاتے رہیں گے۔۔*👇👇👇👇👇👇https://www.facebook.com/rizvimujahidmadia92/🌹دین اسلام کی برکتوں سے مسلمانوں کو مالامال کرنے کے لئے آپ کے تعاون کے طلبگار🌹⚔رضوی مجاھد میڈیا ⚔

Posted by Madni Silsila on Thursday, November 8, 2018